211

مشیربصیر خان نے سنٹرل ورکشاپ ، الیکٹرک سنٹرل اسٹور ، بجلی کی مختلف دیگر تنصیبات کا معائینہ کیا

سری نگر/13؍ جولائی :جموں و کشمیر میں بجلی کی فراہمی کے استحکام اور جدید کاری کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے آج افسران کو ہدایت دی کہ وہ صارفین کو بجلی کی مؤثر فراہمی کیلئے اپنی کوششوں کو دوگنا کریں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سنٹرل ورکشاپ ڈویژن پامپور اور الیکٹرک سنٹرل اسٹور ڈویژن پامپور کے کام کاج کا جائیزہ لینے کے دوران کیا ۔ مشیر نے سرینگر کے مختلف مقامات کا بھی دورہ کیا جہاں درختوں کی شاخوں کی کٹائی کا کام جاری ہے اور انہوں نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ موسم سرما کی تیاریوں کیلئے عملی اقدام کے طور پر مقررہ وقت کے اندر اس کام کو مکمل کریں اور تیز ہواؤں اور موسم کی خرابی کی وجہ سے ٹرانسمیشن میں خلل ڈالنے سے بچیں ۔ انہوں نے افسران کو ہدایت دی کہ کٹائی کا پہلا دور 15 ستمبر تک اور دوسرا دور 10 اکتوبر تک مکمل ہو جائے ۔ مشیر نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ لوگوں کو بجلی ک ضروریات کے تقاضوں کو پورا کرنے کیلئے تمام ضروری اقدامات اٹھائیں ۔ پانپور میں ورکشاپ کا معائینہ کرتے ہوئے انہوں نے تکنیکی خصوصیات کے بارے میں دریافت کیا اور خرابیوں کی صورتحال ، بجلی کے نظام الاوقات ، کنٹرول رومز کا کام ، شکایات کے ازالے کا طریقہ کار سمیت ورکشاپ کے مجموعی کام کا جائیزہ لیا ۔ چیف انجینئر پی ڈی ڈی نے مشیر کو لوگوں کو بجلی کی کی موثر فراہمی کیلئے اپ گریڈیشن کیلئے اٹھائے جانے والے اقدامات سے آگاہ کیا ۔ مشیر نے اس موقعہ پر کہا کہ لیفٹیننٹ گورنر ذاتی طور پر بجلی کے منظر نامے کی نگرانی کر رہے ہیں اور وہ جموں و کشمیر میں بجلی کی بہتر فراہمی کو یقینی بنانے کے بارے میں خصوصی توجہ رکھتے ہیں ۔ مشیر نے کہا کہ حکومت نے بنیادی ڈھانچے کو بڑھایا ہے تا کہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ جہاں تک ممکن ہو صارفین کو بلا خلل بجلی کی فراہمی یقینی بنائی جا سکے ۔ مشیر نے ایم ڈی کے پی ڈی سی ایل کو ہدایت دی کہ وہ اپنے اہداف کا تعین کریں اور مطلوبہ نتائج حاصل کریں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ نقصانات سے بچنے کیلئے بجلی کی لائینوں کے نیچے درختوں کو تراشنا یا کاٹنے میں تیزی لائیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں