1350کروڑروپے کے معاشی پیکیج کااعلان

0
78
’یہ محض آغاز ہے مزید بہت کچھ آنا باقی‘:لیفٹنٹ گورنر منوج سنہا کاپریس کانفرنس میں اعلان
ایک سال کے لئے بجلی اور پانی فیس میں50فیصدرعایت، ٹرانسپورٹروں، آٹو ڈرائیوروں، ہاؤس بوٹ مالکان اور شکارا والوں کیلئے پیکیج زیر غور
سرینگر19،ستمبر کے این ایس جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے سنیچر کے روز جموں وکشمیر کے تجارتی احیائے نو کی خاطر1350کروڑ روپے پیکیج کا اعلان کرتے ہوئے کہا ’یہ محض آغاز ہے مزید بہت کچھ آنا باقی ہے ‘ ۔انہوں نے ایک سال کے لئے بجلی اور پانی فیس میں بھی50فیصد ریاعت کا اعلان کیا ۔ان کا کہناتھا ’ٹرانسپورٹروں، آٹو ڈرائیوروں، ہاؤس بوٹ مالکان اور شکارا والوں کیلئے پیکیج حکومت کے زیر غور ہے ۔کشمیر نیوز سروس کے مطابق راج بھون سرینگر کے احاطے میں واقع آڈیٹوریم میں اپنی تیسری پریس کانفرنس کے دوران لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے جموں کشمیر کے بیمار اقتصادی سیکٹر میں نئی روح پھونکنے کیلئے 1350کروڑ روپے کے خصوصی پیکیج کا اعلان کیا۔انہوں نے کہا ’میں نے جب چارج سنبھالا تو میں نے کہا تھا کہ لوگوں کے مسائل عوام کے تعاون کے بغیر حل نہیں ہونگے‘۔ان کا کہناتھا ’میں نے اگست18کو35وفود سے ملاقات کی جس کے بعد کے کے شرما کی سربراہی میں کمیٹی عمل میں لائی گئی، میں خوش ہوں کہ کمیٹی نے اپنی رپورٹ وقت مقررہ پر پیش کی ہے ، میں اس لئے بھی خوش ہوں کیونکہ ایسا پہلی بار ہوا ہے جب کسی سرکاری کمیٹی نے کم سے کم وقت پر اپنی رپورٹ مکمل کرکے پیش کی ہے۔‘لیفٹیننٹ گو رنر کا کہناتھا کہ کمیٹی نے1350کروڑ روپے اقتصادی پیکیج کی سفارش کی ہے تاکہ بیمار تجارتی سیکٹر میں نئی جان ڈالی جاسکے۔انہوں نے کہا’مجھے آج اس پیکیج کا اعلان کرتے ہوئے خوشی ہورہی ہے،یہ تو محض آغاز ہے، آگے اور بھی بہت کچھ آنے والا ہے‘۔منوج سنہا نے مزید کہا کہ مذکورہ پیکیج ا±س پیکیج کا حصہ ہے جس کا اعلان’ آتمہ نربھر ابھیان‘ (خو د انحصار بھارت)کے تحت جموں کشمیر کیلئے کیا گیاہے اور جس میں6000کروڑ پاور سیکٹر کیلئے مقرر ہےں۔انہوں نے کہا کہ حکومت ٹرانسپورٹروں، آٹو ڈرائیوروں، ہاوس بوٹ مالکان اور شکارا والوں کیلئے ایک الگ پیکیج کے بارے میں بھی سوچ رہی ہے کیونکہ یہ سبھی لوگ گذشتہ 20سال کے دوران کافی متاثر ہوئے ہیں۔انہوں نے مارچ 2021تک سٹیمپ ڈیوٹی سے چھوٹ کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ یکم اکتوبر کو جموں کشمیر کی ہر برانچ پر نوجوانوں بشمول تاجروں کیلئے ایک خصوصی ڈیسک کے قیام کا اعلان کیا جائے گا۔منوج سنہا نے کہا کہ جموں و کشمیر بینک شعبہ سیاحت سے وابستہ لوگوں کی مالی مدد کے لئے’کسٹمائزڈ ہیلپ ٹورزم اسکیم‘ بھی متعارف کرے گا۔ انہوں نے کہا دستکاروں کے لئے کریڈٹ کارڈ کی حد کو ایک لاکھ روپے سے بڑا کر دو لاکھ روپے کیا جائے گا اور انہیں بھی سود میں 7 فیصد رعایت دی جائے گی تاکہ دنیا میں مشہور کشمیری دستکاری کو مزید فروغ مل سکے۔ موصوف نے کہا کہ ایک لینڈ بینک بھی بنایا جا رہا ہے جس کی فوڈ پارک کے لئے اراضی بھی فراہم کی جائے گی اور مدد بھی کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر بینک یکم اکتوبر سے یوتھ اور وومن انٹرپرائزرز کے لئے ایک اسپیشل ڈیسک کا قیام عمل میں لائے گا جس کے تحت ان کی پوری مدد کی جائے گی۔ منوج سنہا نے کہا کہ مرکزی سرکار جموں وکشمیر کے لئے ایک نئی انڈسٹریل پالیسی بنا رہی ہے جس کا بہت جلد اعلان کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس پالیسی سے نہ صرف پہلے سے ہی موجود چھوٹے بڑے کارخانوں کو مدد ملے گی بلکہ نئی کمپنیاں ڈالنے والوں کے لئے بھی یہ پالیسی فائدہ بخش ہوگی۔ موصوف نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ گزشتہ بیس برسوں سے پیچھے جار ہا جموں و کشمیر کا تجارتی شعبہ واپس پٹری پر آجائے۔ انہوں نے کہا کہ اس کے لئے ہمیں بھی تھوڑا آگے بڑھنا ہے اور لوگوں کو بھی تھوڑا آگے آنا ہوگا۔ انہوں نے کہا’جموں و کشمیر میں بلا کسی تفریق کے تجارتی شعبہ سے وابستہ تمام قرض داروں کو چھ ماہ تک سود میں 5 فیصد سبسڈی دی جائے گی جس پر950 کروڑ روپے خرچ ہوں گے اور اس سے لاکھوں بے روزگاروں کو روز گار بھی ملے گا‘۔لیفٹیننٹ گو رنرنے کہا کہ مرکزی سرکار ایک نئی صنعتی پالیسی پر کام کررہی ہے جو عنقریب تیار ہوگی۔اس دوران لیفٹیننٹ گور نر نے ایک سال کےلئے بجلی اور پانی کے فیس میں بھی رعایت کا اعلان کیا ۔انہوں نے کہا ’اس خصوصی پیکیج کی ایک خاص یہ بھی ہے کہ اس کے تحت حکومت ایک بجلی اور پانی کے فیس میں50فیصد رعایت دیں گے ۔ان کا کہناتھا اس رعایت کا سرکاری خزانہ عامرہ پر105کروڑ روپے پڑے گا لیکن حکومت یہ بوجھ برداشت کر نے کے لئے پوری طور طرح سے تیار ہے ۔ان کا کہناتھا کہ یہ رعایت سب کے لئے ہوگی خواہ وہ کسان ہو یا تاجر ہو یا پھر عام آدمی سب کےلئے رعایت ہے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here